تازہ ترین
“باغ” ریاست آزاد جموں و کشمیرشیخ خالد زاہدزیب النساء زیبی، نام ہے ایک عہد کاکھیل حکومت اور سپانسرز کی سر پرستی کے منتظر ہیں،رانا محمود الحسنرانا عباد کی دوسری برسی آج منائی جارہی ہےسوشل میڈیا اور واضح رہے کے قواعدآئی سی سی نے نئی ٹیسٹ رینکنگ جاری کردیقومی رابطہ کمیٹی کے فیصلوں پرعمل شروع، جم، تھیٹرز اور سینما ہالز کل کھل جائیں گےہاتھی حساس جانور،ہلکی سے ہلکی آہٹ بھی سن لیتے ہیںبیروت میں خطرناک دھماکہ۔ 2500 زخمیوں میں سے 25 چل بسےجی۔سی لاہور حسرتوں کو حقیقت سے ملانے کا ذریعہ۔روشن خیالی اور اسلامی تعلیماتکلبھوشن آرڈیننس کچھ ہی دنوں میں “ایکٹ آف پارلیمنٹ” بننے والا ہے۔ جسٹس وجیہگلوبل فاؤنڈیشن کا کے الیکٹرک کیخلاف عدالت جانے کا فیصلہبرقی دنیا سے عملی دنیا میں منتقلیڈسٹرکٹ پولیس افیسربہاولنگرقدوس بیگ کی علما ٕ اکرام سے میٹنگکراچی کی آواز، ہمیں تو اپنوں نے لوٹا۔۔۔۔زادکشمیر میں انٹرنیٹ سروس تحریر   شبیر احمد ڈار بہاولنگرمیاں شوکت علی لالیکاکےمعاون خاص میاں فیض رسول لالیکا کا تقریب سےخطابتعلیمی ادارے کھیلوں کی ترقی میں کردار ادا کرسکتے ہیں، نعمان گوندلآئی ایم ایف کی ایما پر بجلی کی قیمت میں اضافے کی تیاری

ہاشم آملہ بھی سیاہ فاموں کے حق میں سامنے آگئے

60685_GBR190530HASHIMAMLARETIRESCRICKETAP_1565288496194
  • واضح رہے
  • جولائی 16, 2020
  • 11:23 شام

ہر اس شخص کے ساتھ کھڑا ہوں جس کا کسی بھی طرح استحصال کیا گیا ہو یا اس ہراساں کیا گیا ہو۔ سابق جنوبی افریقی کپتان

جنوبی افریقہ کے مایہ ناز بیٹسمین ہاشم آملہ نے سیاہ فاموں کے حقوق کیلئے آواز بلند کردی۔ انہوں نے پروٹیز ٹیم کے سیاہ فام فاسٹ بالر لنگی انگیدی کی ''بلیک لائیوز میٹر" تحریک کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ہر اس شخص کے ساتھ کھڑے ہیں جس کا کسی بھی طرح سے استحصال کیا گیا ہو یا اس ہراساں کیا گیا ہو۔

واضح رہے کہ ویسٹ انڈیز کے سابق کپتان ڈیرن سیمی کے ''بلیک لائیوز میٹر'' پر کھل کر بات کرنے کے بعد انگیدی نے کہا تھا کہ جنوبی افریقہ کے کھلاڑیوں کو بھی اس کی حمایت میں بات کرنا چاہئے۔ اس حوالے سے ہاشم آملہ نے ایک انسٹاگرام پوسٹ میں لکھا کہ ''بلیک لائیوز میٹر'' مہم ہر ایک کے لئے مطابقت رکھتی ہے۔

رپورٹ کے مطابق فاسٹ بالر لنگی انگیدی کا نسلی تعصب کے خلاف لب کشائی کرنا کرکٹ سائوتھ افریقہ (سی ایس اے) کو بالکل بھی پسند نہیں آیا ہے اور بورڈ کی جانب سے ان سے ضابطہ اخلاق کیخلاف وزری پر باز پرس بھی کی گئی ہے۔

واض رہے کہ جنوبی افریقہ کی کرکٹ ٹیم میں آج بھی سیاہ فاموں کے لئے محض 25 فیصد کوٹہ مختص ہے۔ جنوبی افریقہ قومی ٹیم کے تمام طرز میں سیاہ فام کھلاڑیوں کو شامل کر رہا ہے جبکہ اس کا کامیاب تجربہ پہلے بھی کرچکا ہے۔ جنوبی افریقہ کرکٹ بورڈ پہلے ہی ڈومیسٹک ٹیموں میں کوٹا کا نظام متعارف کرواچکا ہے جہاں ٹیم پر لازم ہے کہ تین سیاہ فام افریقیوں سمیت 6 غیر سفید فام کھلاڑیوں کو شامل کرے۔

واضح رہے

اردو زبان کی قابل اعتماد ویب سائٹ ’’واضح رہے‘‘ سنسنی پھیلانے کے بجائے پکّی خبر دینے کے فلسفے پر قائم کی گئی ہے۔ ویب سائٹ پر قومی اور بین الاقوامی حالات حاضرہ عوامی دلچسپی کے پہلو کو مدنظر رکھتے ہوئے پیش کئے جاتے ہیں۔

واضح رہے