تازہ ترین
سابق آمر مشرف کو آئین توڑنے پر سزائے موت کا حکمپی ٹی آئی رکن پنجاب اسمبلی نے 37 ایکڑ زمین ہتھیالی’’سارے پاکستان میں ملک ریاض جیسی مافیا سرگرم ہے‘‘اوورسیز پاکستانیوں کی قانونی معاونت کیلئے ادارہ بنانے کا فیصلہاظہر علی ٹیسٹ اور بابر ٹی ٹوئنٹی کپتان مقرر۔ سرفراز فارغمولانا فضل الرحمان کا دھرنے کا اعلان۔ کنٹینرز بھی بنوالئےالیکشن کمیشن ارکان کے مستقبل کا فیصلہ ہونے کے قریبزلزلے سے اموات کی تعداد 38 ہوگئی۔ سینکڑوں افراد بے یارو مددگاربائیو میٹرک تصدیق کے باوجود بینک اکاؤنٹس آپریشنل نہ ہونیکی شکایاتملکی تاریخ میں پہلی بار مرغی 400 روپے کی ہوگئیگستاخ ٹیچر نوتن لعل کو قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہنارتھ کراچی صنعتی ایریا میں ڈاکوؤں کا راجپنجاب حکومت نے ایڈز کنٹرول پروگرام کے فنڈز روک لئےافغانستان میں این ڈی ایس کمپاؤنڈ کے قریب دھماکہ۔ 30 ہلاکافغان طالبان کے حملے تیز۔ غنی حکومت کیلئے الیکشن درد سر بن گیاپولیسٹر فلامنٹ یارن پر دوبارہ ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کئے جانے کا امکانسیاسی قیدیوں کو ڈیل پر مجبور کرنے کیلئے بلیک میلنگ شروعوفاق میں ساری ٹیم مشرف کی ہے۔ رضا ربانیپی ٹی آئی حکومت کے خاتمے کیلئے نواز شریف کا بڑا فیصلہسنسرشپ کا سامنا کرنے والے ممالک میں پاکستان کا 39واں نمبر

کشمیر میں بدترین مظالم پر عالمی برادری کو ہوش آگیا

kashmir issue in un
  • واضح رہے
  • اگست 15, 2019
  • 7:14 شام

پاکستان کی درخواست پر مقبوضہ وادی میں حالیہ بھارتی دہشت گردی کے حوالے سے سیکورٹی کونسل کا اجلاس کل بروز جمعہ طلب کر لیا گیا ہے۔

پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی جانب سے مسئلہ کشمیر پر عالمی برداری کی توجہ مبذول کرائے جانے کے بعد مقبوضہ وادی کی صورتحال پر اقوام متحدہ کی سیکورٹی کونسل کا اجلاس کل بروز جمعہ طلب کر لیا گیا ہے۔ جبکہ بھارتی غاصبانہ قبضے کیخلاف چین نے بھی سیکورٹی کونسل کا بند کمرہ اجلاس طلب کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔ سفارتی ذرائع کا دعویٰ ہے کہ چین کے ساتھ ساتھ روس نے بھی کشمیریوں سے متعلق پاکستانی موقف کی حمایت کی ہے۔

بدھ کو شاہ محمود قریشی نے خط لکھ کر سیکورٹی کونسل کے صدر سے مطالبہ کیا تھا کہ اجلاس بلا کر مقبوضہ جموں و کشمیر کی صورتحال پر بات کی جائے۔

ریڈیو پاکستان کی رپورٹ کے مطابق سفارتی ذرائع نے تصدیق کی کہ سیکیورٹی کونسل کا اجلاس جمعہ (16 اگست) کو منعقد کیا جائے گا جس میں پاکستان اور بھارت کے درمیان تصفیہ طلب معاملے پر مبنی ایجنڈے کے تحت مقبوضہ جموں و کشمیر کی صورتحال پر غور کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ اگست میں سیکورٹی کونسل کی صدارت پولینڈ کے پاس ہے۔ پولینڈ کی سفیر جوانا ورونیکا نے امریکی نشریاتی ادارے سے گفتگو میں کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر مشاورت کیلئے سیکورٹی کونسل کا بند کمرہ اجلاس چین کی درخواست پر ہونے جا رہا ہے۔

رپورٹ کے مطابق عالمی سطح پر بھارت کو بڑی سفارتی کا شکست کرنا پڑا ہے اور اسے اپنے یومِ جمہوریہ کے موقع پر یہ جھٹکا ملا ہے کہ کشمیر کے معاملے کو اقوام عالم نے دیکھنا شروع کر دیا ہے۔ اور یہ کہ کشمیر پر بھارتی قبضے کا معاملہ 50 برس بعد اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل تک پہنچ گیا ہے۔

سفارتی ذرائع کا کہنا تھا کہ فرانس نے پاکستانی خط پر رد عمل دیتے ہوئے تجویز پیش کی تھی کہ سیکورٹی کونسل اس معاملے کو ’’آخری ایجنڈے‘‘ کے طور پر دیکھے۔ ادھر برطانوی خبر رساں ادارے رائٹرز کے مطابق اس وقت سیکیورٹی کونسل کے صدر ملک پولینڈ پر منحصر ہوگا کہ وہ تمام 15 رکن ممالک (5 مستقل اور 10 غیر مستقل) کے درمیان ثالثی اور وقت کے لیے اتفاق رائے پیدا کرے۔

معلوم ہوا ہے کہ بھارت نے سلامتی کونسل کا اجلاس بلائے جانے سے روکنے کیلئے ہر ممکن کوشش کی مگر ناکام رہا۔ 1964 کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ سلامتی کونسل کشمیر کے معاملے پر اجلاس منعقد کر رہی ہے جو عالمی سطح پر بھارت کی بڑی سفارتی شکست ہے اور اس تمام صورتحال پر متعصب بھارتی میڈیا کو بھی چُپ لگ گئی ہے۔

واضح رہے کہ 5 اگست کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت سے متعلق آرٹیکل 370 ختم کئے جانے کے بعد سے بھارت نے مقبوضہ وادی میں کرفیو لگا رکھا ہے، جو اب 12ویں روز میں داخل ہوگیا ہے۔