تازہ ترین
مولانا فضل الرحمان کا دھرنے کا اعلان۔ کنٹینرز بھی بنوالئےالیکشن کمیشن ارکان کے مستقبل کا فیصلہ ہونے کے قریبزلزلے سے اموات کی تعداد 38 ہوگئی۔ سینکڑوں افراد بے یارو مددگاربائیو میٹرک تصدیق کے باوجود بینک اکاؤنٹس آپریشنل نہ ہونیکی شکایاتملکی تاریخ میں پہلی بار مرغی 400 روپے کی ہوگئیگستاخ ٹیچر نوتن لعل کو قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہنارتھ کراچی صنعتی ایریا میں ڈاکوؤں کا راجپنجاب حکومت نے ایڈز کنٹرول پروگرام کے فنڈز روک لئےافغانستان میں این ڈی ایس کمپاؤنڈ کے قریب دھماکہ۔ 30 ہلاکافغان طالبان کے حملے تیز۔ غنی حکومت کیلئے الیکشن درد سر بن گیاپولیسٹر فلامنٹ یارن پر دوبارہ ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کئے جانے کا امکانسیاسی قیدیوں کو ڈیل پر مجبور کرنے کیلئے بلیک میلنگ شروعوفاق میں ساری ٹیم مشرف کی ہے۔ رضا ربانیپی ٹی آئی حکومت کے خاتمے کیلئے نواز شریف کا بڑا فیصلہسنسرشپ کا سامنا کرنے والے ممالک میں پاکستان کا 39واں نمبردورہ پاکستان کیلئے سری لنکا کی بے بی ٹیم کا اعلانبھارت کشمیر سے کرفیو کیوں نہیں اٹھا رہا؟ پاکستانی حکومت غافلجنوبی افریقہ: ہر 3 گھنٹے میں ایک عورت قتل کردی جاتی ہےعدلیہ نے ملک کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا۔ حشمت حبیبپنجاب پولیس کی حراست میں 17 افراد کی ہلاکت کا انکشاف

ویب سائٹ کا ڈیٹا اُڑانے والے ملازمین پر محکمہ تعلیم سندھ مہربان

government of sindh education and literacy department
  • راؤ افنان
  • جون 30, 2019
  • 3:37 شام

محکمہ تعلیم سندھ نے اپنی ویب سائٹ کا ڈیٹا اُڑانے میں ملوث ملازمین کیخلاف کارروائی کے بجائے دوبارہ نکالے گئے ملازمین کی خدمات مانگ لیں۔

محکمہ تعلیم سندھ کی ویب سائٹ ڈیڑھ ماہ سے ویب سائٹ بند رہنے کے بعد غیر متعلقہ افسران کو ویب بحالی کا کام تفویض کر دیا گیا۔ تعلیم کی ویب سائٹ میں ریونیو کے افسران کو شامل کرنے پر محکمے سمیت دیگر افسران میں شدید بے چینی پائی جاتی ہے۔

واضح رہے کہ محکمہ تعلیم سندھ کی ویب سائٹ 17 مئی کو اس وقت کریش کر گئی تھی جب کنٹریکٹ پر رکھے گئے ملازمین کو کنٹریکٹ مکمل ہونے کے بعد فارغ کر دیا گیا تھا، حس کے بعد صوبے بھر کے تعلیمی اداروں کے افسران ویب سائٹ بندش کے باعث پریشانی میں مبتلا رہے۔ کیونکہ ملازمین کا ڈیٹا اُڑ گیا تھا۔

notification of government of sindh education and literacy department

تاہم محکمہ تعلیم کے سیکرٹری کی جانب سے کمیٹی قائم کی گئی تھی جس نے ملوث افسران و ملازمین کیخلاف کارروائی کے ساتھ ساتھ فی الفور ویب سائٹ بحالی کا حکم دیا، جس کے ایک ماہ بعد سرکاری ویب سائٹ اور بائیو میٹرک کی بحالی کا خیال آیا ہے۔ بعدازاں محکمہ تعلیم سکول کے سیکرٹری قاضی شاہد پرویز نے ویب سائٹ اور بائیو میٹرک بحالی کے لئے کمیٹی قائم کردی۔

مذکورہ کمیٹی کو 10 روز میں ٹاسک پورا کر کے سیکریٹری اسکول کو رپورٹ جمع کرانے کے احکامات دے دئیے گئے ہیں۔ واضح رہے کہ انکوائری کمیٹی کی سفارشات پر ایک ماہ بعد عملدرآمد کرانے کیلئے کمیٹی قائم اور دفتری حکم جاری کردیا گیا ہے جس میں غیر متعلقہ افسران کے علاوہ دوبارہ انہی ملازمین کو رکھا گیا ہے جن کو فارغ کرنے سے مسئلہ پیش آیا تھا۔

کمیٹی کا چیئرمین ڈپٹی ڈائریکٹر بورڈ آف ریونیو فراز احمد کو بنایا گیا ہے۔ اور ممبران میں ڈپٹی کمشنر سندھ ریونیو بورڈ کراچی شاہد الغنی، اسسٹنٹ کمشنر سندھ ریونیو بورڈ کراچی فہیم احمد کھتری، محکمہ تعلیم آئی ٹی ڈیٹا بیس کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر فرخ وسیع، محکمہ تعلیم کے شعبہ آئی ٹی کے سابق منیجر انور بھٹو، سابق سافٹ انجینئر سجاد علی سومرو بطور رکن شامل ہیں۔ جبکہ ریونیو کے افسران کا کوئی متعلقہ تجربہ نہیں ہے۔

order of government of sindh education and literacy department

محکمہ تعلیم کی ویب سائٹ اور ڈیٹا بیس 17 مئی کو بند ہونے سے تعلیم اور تعلیمی اداروں سے منسلک ہزاروں ملازمین کو شدید مسائل کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ حیرت انگیز طور ویب سائٹ اور بائیو میٹرک کی بحالی کیلئے محکمہ تعلیم نے مارچ میں فارغ کئے گئے ملازمین کی دوبارہ خدمات لے لی ہیں جس سے محکمے کے پاس ویب کا اختیار نہیں ہو گا۔ ایک بار پھر انہی ملازمین کے پاس اختیار رہے گا جن کو فارغ کرنے کے بعد ویب سائٹ بندش کا مسئلہ سامنے آیا تھا۔

مارچ میں فارغ کئے گئے ان ملازمین میں آئی ٹی منیجر انور علی بھٹو اور سافٹ انجینئر سجاد احمد سومرو شامل ہیں۔ اس حوالے سے موقف جاننے کیلئے سیکرٹری ایجوکیشن تعلیم قاضی شاہد پرویز سے رابطہ کیا گیا، جن سے رابطہ نہیں ہو سکا۔