تازہ ترین
کشمیر دنیا کا سب سے بڑا قید خانہ اور کراچی کچرا کنڈیبھارتی خفیہ ایجنسی ’’را‘‘ میڈیا سے کتراتی ہے؟پی ٹی آئی حکومت نے نواز شریف کی بے گناہی کو بالواسطہ تسلیم کرلیامقبوضہ کشمیر: بھارت کو ایک اور جھٹکا دینے کی پاکستانی تیاریوکٹ ٹیکر سری لنکن اسپنر کا بالنگ ایکشن رپورٹپاکستان میں فوجی سربراہان کی تاریخکولیشن سپورٹ فنڈ بند کیا تو پاکستان سے تعلقات بہتر ہوئے۔ ٹرمپبھارتی فوج نے کشمیر میں کرکٹ ٹیم کے کھلاڑیوں کو بھی اٹھا لیا’’انٹرنیشنل کرمنل کورٹ میں کشمیریوں کی نسل کشی کا مقدمہ لڑا جائے‘‘جنریشن گیپ ایک معاشرتی ناسورکشمیر میں بدترین مظالم پر عالمی برادری کو ہوش آگیانماز پر پابندی بھارت کی دیگر ریاستوں تک جا پہنچیبھارتی ٹینس ایسوسی ایشن کا پاکستان میں ڈیوس کپ کھیلنے سے انکارحکومتی عدم توجہی سے سی پیک منصوبے متاثر ہونے لگےسرکاری سعودی آئل کمپنی کی بھارت میں بھاری سرمایہ کاری’’مسلم اکثریت کے باعث کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی گئی‘‘تعلق کے دوہرے معیار سے نجات!وادی میں لاک ڈاؤن۔ ہزاروں کشمیری نمازِ عید ادا نہیں کر پائےیومِ آزادی پر چوری شدہ نغمے کا استعمال 35اے اور 370 کی تنسیخ۔ جسٹس وجیہہ نے حکومت کو قانونی راستہ دکھادیا

ویب سائٹ کا ڈیٹا اُڑانے والے ملازمین پر محکمہ تعلیم سندھ مہربان

government of sindh education and literacy department
  • راؤ افنان
  • جون 30, 2019
  • 3:37 شام

محکمہ تعلیم سندھ نے اپنی ویب سائٹ کا ڈیٹا اُڑانے میں ملوث ملازمین کیخلاف کارروائی کے بجائے دوبارہ نکالے گئے ملازمین کی خدمات مانگ لیں۔

محکمہ تعلیم سندھ کی ویب سائٹ ڈیڑھ ماہ سے ویب سائٹ بند رہنے کے بعد غیر متعلقہ افسران کو ویب بحالی کا کام تفویض کر دیا گیا۔ تعلیم کی ویب سائٹ میں ریونیو کے افسران کو شامل کرنے پر محکمے سمیت دیگر افسران میں شدید بے چینی پائی جاتی ہے۔

واضح رہے کہ محکمہ تعلیم سندھ کی ویب سائٹ 17 مئی کو اس وقت کریش کر گئی تھی جب کنٹریکٹ پر رکھے گئے ملازمین کو کنٹریکٹ مکمل ہونے کے بعد فارغ کر دیا گیا تھا، حس کے بعد صوبے بھر کے تعلیمی اداروں کے افسران ویب سائٹ بندش کے باعث پریشانی میں مبتلا رہے۔ کیونکہ ملازمین کا ڈیٹا اُڑ گیا تھا۔

notification of government of sindh education and literacy department

تاہم محکمہ تعلیم کے سیکرٹری کی جانب سے کمیٹی قائم کی گئی تھی جس نے ملوث افسران و ملازمین کیخلاف کارروائی کے ساتھ ساتھ فی الفور ویب سائٹ بحالی کا حکم دیا، جس کے ایک ماہ بعد سرکاری ویب سائٹ اور بائیو میٹرک کی بحالی کا خیال آیا ہے۔ بعدازاں محکمہ تعلیم سکول کے سیکرٹری قاضی شاہد پرویز نے ویب سائٹ اور بائیو میٹرک بحالی کے لئے کمیٹی قائم کردی۔

مذکورہ کمیٹی کو 10 روز میں ٹاسک پورا کر کے سیکریٹری اسکول کو رپورٹ جمع کرانے کے احکامات دے دئیے گئے ہیں۔ واضح رہے کہ انکوائری کمیٹی کی سفارشات پر ایک ماہ بعد عملدرآمد کرانے کیلئے کمیٹی قائم اور دفتری حکم جاری کردیا گیا ہے جس میں غیر متعلقہ افسران کے علاوہ دوبارہ انہی ملازمین کو رکھا گیا ہے جن کو فارغ کرنے سے مسئلہ پیش آیا تھا۔

کمیٹی کا چیئرمین ڈپٹی ڈائریکٹر بورڈ آف ریونیو فراز احمد کو بنایا گیا ہے۔ اور ممبران میں ڈپٹی کمشنر سندھ ریونیو بورڈ کراچی شاہد الغنی، اسسٹنٹ کمشنر سندھ ریونیو بورڈ کراچی فہیم احمد کھتری، محکمہ تعلیم آئی ٹی ڈیٹا بیس کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر فرخ وسیع، محکمہ تعلیم کے شعبہ آئی ٹی کے سابق منیجر انور بھٹو، سابق سافٹ انجینئر سجاد علی سومرو بطور رکن شامل ہیں۔ جبکہ ریونیو کے افسران کا کوئی متعلقہ تجربہ نہیں ہے۔

order of government of sindh education and literacy department

محکمہ تعلیم کی ویب سائٹ اور ڈیٹا بیس 17 مئی کو بند ہونے سے تعلیم اور تعلیمی اداروں سے منسلک ہزاروں ملازمین کو شدید مسائل کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ حیرت انگیز طور ویب سائٹ اور بائیو میٹرک کی بحالی کیلئے محکمہ تعلیم نے مارچ میں فارغ کئے گئے ملازمین کی دوبارہ خدمات لے لی ہیں جس سے محکمے کے پاس ویب کا اختیار نہیں ہو گا۔ ایک بار پھر انہی ملازمین کے پاس اختیار رہے گا جن کو فارغ کرنے کے بعد ویب سائٹ بندش کا مسئلہ سامنے آیا تھا۔

مارچ میں فارغ کئے گئے ان ملازمین میں آئی ٹی منیجر انور علی بھٹو اور سافٹ انجینئر سجاد احمد سومرو شامل ہیں۔ اس حوالے سے موقف جاننے کیلئے سیکرٹری ایجوکیشن تعلیم قاضی شاہد پرویز سے رابطہ کیا گیا، جن سے رابطہ نہیں ہو سکا۔