تازہ ترین
نئی حکومت کو درپیش بڑے چیلنجزکشمیراورفلسطین میں قتل عام جاریبھارتی دہشت گردی نے کشمیر کوموت کی وادی بنا دیاووٹ کا درست استعمال ہی قوم کی تقدیر بد لے گادہشت گرد متحرکنئے سال کا سورج طلوع ہوگیااسٹیبلشمنٹ کے سیاسی اسٹیج پر جمہوری کٹھ پتلی تماشاحکومت آئی ایل او کنونشن سی 176 کوتسلیم کرےجمہوریت کے اسٹیج پر” کٹھ پتلی تماشہ“ جاریدہشت گردی کا عالمی چمپئنالیکشن اور جمہوریت کے نام پر تماشا شروعافریقہ، ایشیا میں صحت بخش خوراک عوامی دسترس سے باہردُکھی انسانیت کا مسیحا : چوہدری بلال اکبر خانوحشی اسرائیل نے غزہ کو فلسطینی باشندوں کے قبرستان میں تبدیل کر دیا”اسٹیبلشمنٹ “ کے سیاسی اسٹیج پر ” نواز شریف “ کی واپسیراکھ سے خوشیاں پھوٹیںفلسطین لہو لہو ۔ ”انسانی حقوق“ کے چمپئن کہاں ہیں؟کول مائنز میں انسپکشن کا نظام بہتر بنا کر ہی حادثات میں کمی لائی جا سکتی ہےخوراک سے اسلحہ تک کی اسمگلنگ قومی خزانے کو چاٹ رہی ہےپاک فوج پاکستان میں زرعی انقلاب لانے کیلئے تیار

چرس کی تیاری کا چونکا دینے والا نسخہ

چرس
  • نعمان کیانی
  • اپریل 29, 2020
  • 1:01 صبح

لاکھوں روپے کے حساب سے ملنے والے چرس کے عرق کا نشہ سندھ کے مالدار طبقے خصوصاً وڈیروں اور سرداروں میں کافی مقبول ہے

کون کہتا ہے معاشرہ خود غرض ہو گیا ہے۔ دوسروں میں خوشیاں بانٹنے کا جذبہ اتنا کہ ساتھ مل کر بیٹھ کر جو تیار ہو رہا ہے وہ کوئی چاکلیٹ نہیں بلکہ جہاز بنانے کا نسخہ ہے۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ چرس کیسے تیار کی جا رہی ہے۔ افغانستان کے شہر ہلمند میں مل بیٹھ کر اس کام کو سر انجام دیا جاتا ہے۔ ہم یقین سے کہہ سکتے ہیں کہ اس سے پہلے آپ نے چرس کی ایسی تیاری کبھی پہلے نہیں دیکھی ہوگی۔

کراچی کے بیشتر علاقوں میں چرس پینے والوں کی بہت بڑی تعداد پائی جاتی ہے، جو پوش علاقوں سمیت فٹ پاتھ کنارے بیٹھے افراد پر مبنی ہے۔ شہر میں منشیات فروشوں کے خلاف اب تک کوئی موثر کارروائی کرنے میں ناکام رہی ہے اور یہ دھندا لاک ڈاؤن میں بھی پہلے کی طرح جاری ہے۔

کراچی میں 2 قسم کی چرس پائی جاتی ہے۔ ایک اعلی کوالٹی گردہ ہے۔ جبکہ اس سے ہلکی کوالٹی کی چرس کم ریٹوں پر دستیاب ہے۔ شہر میں آئس کا نشہ بھی نوجوانوں کو کھوکھلا کر رہا ہے۔

ذرائع کے مطابق کراچی میں فی کلو گردہ لاکھ سے سوا لاکھ روپے کے درمیان فروخت کیا جا رہا ہے۔ جبکہ چرس 60 ہزار روپے فی کلو کے حساب سے دستیاب ہے۔ اس کے علاوہ چرس کے عرق کی قیمت سب سے بلند ہے اور یہ مقامی سرداروں میں تقسیم ہوتی ہے، کیونکہ یہ بہت کم مقدار میں نکلتی ہے۔

نعمان کیانی

کراچی کی صحافت میں ابھرنے والا ایک نوجوان ستارہ۔ کراچی یونیورسٹی سے شعبہ جُرمیات میں ڈگری حاصل کی۔ اور اخبارات سمیت ٹی وی چینلز کیلئے بھی رپورٹنگ کر چکے ہیں۔

نعمان کیانی