تازہ ترین
سابق آمر مشرف کو آئین توڑنے پر سزائے موت کا حکمپی ٹی آئی رکن پنجاب اسمبلی نے 37 ایکڑ زمین ہتھیالی’’سارے پاکستان میں ملک ریاض جیسی مافیا سرگرم ہے‘‘اوورسیز پاکستانیوں کی قانونی معاونت کیلئے ادارہ بنانے کا فیصلہاظہر علی ٹیسٹ اور بابر ٹی ٹوئنٹی کپتان مقرر۔ سرفراز فارغمولانا فضل الرحمان کا دھرنے کا اعلان۔ کنٹینرز بھی بنوالئےالیکشن کمیشن ارکان کے مستقبل کا فیصلہ ہونے کے قریبزلزلے سے اموات کی تعداد 38 ہوگئی۔ سینکڑوں افراد بے یارو مددگاربائیو میٹرک تصدیق کے باوجود بینک اکاؤنٹس آپریشنل نہ ہونیکی شکایاتملکی تاریخ میں پہلی بار مرغی 400 روپے کی ہوگئیگستاخ ٹیچر نوتن لعل کو قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہنارتھ کراچی صنعتی ایریا میں ڈاکوؤں کا راجپنجاب حکومت نے ایڈز کنٹرول پروگرام کے فنڈز روک لئےافغانستان میں این ڈی ایس کمپاؤنڈ کے قریب دھماکہ۔ 30 ہلاکافغان طالبان کے حملے تیز۔ غنی حکومت کیلئے الیکشن درد سر بن گیاپولیسٹر فلامنٹ یارن پر دوبارہ ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کئے جانے کا امکانسیاسی قیدیوں کو ڈیل پر مجبور کرنے کیلئے بلیک میلنگ شروعوفاق میں ساری ٹیم مشرف کی ہے۔ رضا ربانیپی ٹی آئی حکومت کے خاتمے کیلئے نواز شریف کا بڑا فیصلہسنسرشپ کا سامنا کرنے والے ممالک میں پاکستان کا 39واں نمبر

پی ٹی آئی جلسے میں کھلاڑی گتھم گتھا۔ کرسیاں چل گئیں

pti workers fighting
  • واضح رہے
  • اپریل 28, 2019
  • 11:42 شام

کراچی میں حکمراں جماعت کے 23ویں یوم تاسیس کے موقع پر کارکنان نے صوبائی قیادت کیخلاف شدید نعرے بازی کی، جو جھگڑے کا سبب بنی۔

پی ٹی آئی کے 23ویں یوم تاسیس کے جلسے میں کارکنان آپس میں الجھ پڑے۔ اطلاعات کے مطابق پتھراؤ اور کرسیاں پھینکنے کے نتیجے میں کئی افراد زخمی ہوئے ہیں۔ کراچی کے علاقے گلشن اقبال کے منگل بازار گراؤنڈ میں یوم تاسیس کا جلسہ منعقد کیا گیا، جس سے پارٹی رہنماؤں نے خطاب کیا۔

جلسے کے دوران پی ٹی آئی کے کھلاڑی آپس میں گتھم گتھا ہوگئے اور ایک دوسرے پر پتھراؤ کیا۔ اس کے بعد کارکنان نے کرسیاں ایک دوسرے پر بھی پھینکیں، جس سے کئی افراد زخمی ہوئے۔

ٹی وی رپورٹ کے مطابق کھلاڑیوں نے حلیم عادل شیخ، خرم شیر زمان اور دیگر رہنماؤں کیخلاف شدید نعرے بازی کی۔ بدنظمی کے باعث پی ٹی آئی رہنماؤں کو جلسہ ختم کرنا پڑا اور اپنے اپنے گھروں کو روانہ ہوگئے۔

جلسے کی کوریج کیلئے منگل بازار گراؤنڈ میں موجود صحافیوں کا کہنا ہے کہ جلسے میں شرکا کی تعداد بھی زیادہ نہیں تھی۔ جبکہ اس جلسے سے ثابت ہوگیا کہ کارکنان پی ٹی آئی کی صوبائی قیادت سے بے حد ناراض ہیں۔

جلسے کے دوران کارکنان نے صوبائی قیادت کیخلاف شدید نعرے بازی بھی کی جبکہ اسٹیج سے کارکنان کو روکنے کی بھی کوشش کی گئی، تاہم کھلاڑیوں نے قیادت کی ایک بھی نہ سنی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ جھگڑا غالباً صوبائی قیادت کیخلاف نعرے بازی کی وجہ سے شروع ہوا۔ اس موقع پر دو دھڑے آپس میں گتھم گتھا ہوگئے۔