تازہ ترین
سابق آمر مشرف کو آئین توڑنے پر سزائے موت کا حکمپی ٹی آئی رکن پنجاب اسمبلی نے 37 ایکڑ زمین ہتھیالی’’سارے پاکستان میں ملک ریاض جیسی مافیا سرگرم ہے‘‘اوورسیز پاکستانیوں کی قانونی معاونت کیلئے ادارہ بنانے کا فیصلہاظہر علی ٹیسٹ اور بابر ٹی ٹوئنٹی کپتان مقرر۔ سرفراز فارغمولانا فضل الرحمان کا دھرنے کا اعلان۔ کنٹینرز بھی بنوالئےالیکشن کمیشن ارکان کے مستقبل کا فیصلہ ہونے کے قریبزلزلے سے اموات کی تعداد 38 ہوگئی۔ سینکڑوں افراد بے یارو مددگاربائیو میٹرک تصدیق کے باوجود بینک اکاؤنٹس آپریشنل نہ ہونیکی شکایاتملکی تاریخ میں پہلی بار مرغی 400 روپے کی ہوگئیگستاخ ٹیچر نوتن لعل کو قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہنارتھ کراچی صنعتی ایریا میں ڈاکوؤں کا راجپنجاب حکومت نے ایڈز کنٹرول پروگرام کے فنڈز روک لئےافغانستان میں این ڈی ایس کمپاؤنڈ کے قریب دھماکہ۔ 30 ہلاکافغان طالبان کے حملے تیز۔ غنی حکومت کیلئے الیکشن درد سر بن گیاپولیسٹر فلامنٹ یارن پر دوبارہ ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کئے جانے کا امکانسیاسی قیدیوں کو ڈیل پر مجبور کرنے کیلئے بلیک میلنگ شروعوفاق میں ساری ٹیم مشرف کی ہے۔ رضا ربانیپی ٹی آئی حکومت کے خاتمے کیلئے نواز شریف کا بڑا فیصلہسنسرشپ کا سامنا کرنے والے ممالک میں پاکستان کا 39واں نمبر

مودی کے یار امارات سے احتجاج۔ چیئرمین سینیٹ نے دورہ منسوخ کردیا

مودی کے یار امارات سے احتجاج۔ چیئرمین سینیٹ نے دورہ منسوخ کردیا
  • واضح رہے
  • اگست 25, 2019
  • 1:31 صبح

کشمیری مسلمانوں پر ظلم کے پہاڑ توڑے جانے کے باوجود متحدہ عرب امارات نے بھارتی وزیراعظم کو اعلیٰ ترین سول ایوارڈ سے نوازا، جس پر پاکستان کا سخت ردعمل سامنے آیا ہے۔

سینیٹ کے چیئرمین صادق سنجرانی نے مسلمانوں کے قاتل بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کو متحدہ عرب امارات (یو اے ای) کی جانب سے اعلیٰ ترین سول ایوارڈ دیئے جانے پر بطور احتجاج اپنا دورہ منسوخ کردیا ہے۔ واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات ان چند اسلامی ممالک میں سے ہے، جس نے مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے حالیہ درندہ صفت اقدامات کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال میں اس کی حمایت کی ہے۔

چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے اماراتی رویے پر سخت ناپسندیگی کا اظہار کرتے ہوئے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے حالیہ دورہ متحدہ عرب امارات کے پس منظر میں اپنا دورہ منسوخ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ سینیٹ سیکٹریٹ سے جاری اعلامیے کے مطابق چیئرمین سینیٹ نے متحدہ عرب امارات کا پہلے سے طے شدہ سرکاری دورہ منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اعلامیے میں واضح کیا گیا کہ یہ دورہ بھارتی وزیراعظم کے حالیہ دورے کے پس منظر کو دیکھتے ہوئے منسوخ کیا گیا۔ اس بیان میں کہا گیا کہ پاکستان کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کی بھرپور حمایت کرتا ہے اور مودی حکومت کی جانب سے اس وقت کشمیری مسلمانوں پر ظلم و ستم کی انتہا اور کرفیو نافذ ہے۔ لہٰذا ایسے موقع پر یو اے ای کا دورہ پاکستانی قوم اور کشمیری ماؤں، بہنوں اور بزرگوں کی دل آزاری کا سبب بنے گا، اس لئے چیئرمین سینیٹ نے اپنا اور پارلیمانی وفد کا دورہ منسوخ کیا۔

مقبوضہ کشمیر کی موجودہ صورتحال کے باوجود متحدہ عرب امارات نے بھارت کے وزیراعظم نریندر مودی کو اپنے اعلیٰ ترین سول ایوارڈ سے نوازا تھا۔ متحدہ عرب امارات کے شیخ محمد بن زید النہیان نے نریندر مودی سے ملاقات کی تھی اور انہیں امارات کا اعلیٰ ترین سول ایوارڈ ’’آرڈر آف زیاد‘‘ سے نوازا تھا۔

واضح رہے کہ بھارت نے 5 اگست کو مقبوضہ کشمیری کی خصوصی حیثیت سے متعلق آئین کے آرٹیکل 370 کا خاتمہ کردیا تھا اور وادی کو 2 حصوں میں تقسیم کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس اعلان سے قبل ہی مقبوضہ وادی کو فوجی چھاؤنی میں تبدیل کر دیا گیا تھا۔ کرفیو کے نفاذ کے ساتھ وادی میں مواصلاتی نظام بھی غیر اعلانیہ مدت تک بند کر دیا گیا تھا۔ کمیونکیشن نیٹ ورک کی پابندی ابھی تک نہیں اٹھائی گئی ہے۔