تازہ ترین
امریکہ: آن لائن کلاسیں لینے والے غیر ملکی طلبہ کو ملک بدر کرنے کی پالیسی واپسجنونی فوٹو گرافر نے گھر کو کیمرے میں ہی بدل ڈالاوزیراعظم عمران خان کا آج دیا مربھاشا ڈیم کے دورے پر جانے کا پروگرامایران، انڈیا تجارتی تعلقات: ایران نے چاہ بہار بندرگاہ کو ریل کے ذریعے زاہدان سے جوڑنے کے منصوبے سے انڈیا کو علیحدہ کر دیاوزیراعظم کے زیر صدارت وفاقی کابینہ اجلاس،کےالیکٹرک کے معاملے پر فیصلہ نہ ہو سکا“ریتلا علاقہ مگر تعلیم کے اعتبار سے زرخیز”تعمیرات کیلئے 31دسمبر تک مراعات، سرمایہ کاری اور گھر کی خریداری پر رقوم کے ذرائع نہیں پوچھے جائینگے،نسلی تعصب کی بات کرتے ہوے مائیکل ہولڈنگ ابدیدہ ہو گےوفاقی حکومت کا ریٹائرمنٹ کی عمر 55 سال کرنے پر غورمحکمہ جنگلات کے سیکرٹری کپٹین (ر) محمد آصف کاچھانگا مانگا جنگل کا تفصیلی دورہاسلام آباد مندر کی تعمیرعیدالاضحیٰ تعطیلاتپنجاب باکسنگ ایسوسی ایشن نے فیصل آباد ڈویژن کے الیکشن کو غیر آئینی قرار دے دیاخانیوال 7 جولائی 2020 واضح رہے پرائس کنٹرول مجسٹریٹ کبیروالہتیری یاد آئی تیرے جانے کے بعدشین چین جی چرچ کے چار ہزرا اراکین نے پلازمہ عطیہ کیا،مین ہی لیفیصل آباد ڈویژنل باکسنگ ایسوسی ایشن کے غیر قانونی الےکشنبلوچستان کے لاپتہ افراد: لاپتہ ہونے سے قبل والد کو سیاسی نظریات کی وجہ سے دھمکی آمیز فون آتے تھےچین کے ساتھ کشیدگی کے دوران نریندر مودی کے لیہ دورے کے کیا معنی ہے؟تاجروں کا مارکیٹوں سے لاک ڈاؤن کے خاتمے کا مطالبہ

ایٹمی دھماکے کرکے ملکی دفاع کو ناقابل تسخیر بنایا۔ شہباز شریف

  • واضح رہے
  • مئی 28, 2020
  • 6:59 شام

یوم تکبیر پر ن لیگ کی لاہور میں منعقدہ تقریب سے دیگر رہنمائوں نے بھی خطاب کیا۔ سعد رفیق بولے کہ ملک میں جمہوریت نہ ہو تو ایٹم بم بھی کام نہیں آتا 

مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کا کہنا ہے کہ ایٹمی دھماکے کرنے کے لیے نواز شریف نے بھاری معاشی پیکیج ٹھکرا دیا تھا اور  آج کے دن ملک کو نیا استحکام بخشا۔ واضح رہے کہپاکستان نے آج سے 22 سال قبل نواز شریف کے دور حکومت میں بھارت کی جانب سے ایٹمی دھماکوں کے جواب میں 28 مئی 1998 کو صوبہ بلوچستان کے ضلع چاغی کے مقام پر پانچ کامیاب ایٹمی دھماکے کیے جس کے بعد اس دن کو یوم تکبیر کے نام سے موسوم کیا گیا۔

یوم تکبیر کی تقریب سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے صدر شہبازشریف  نے کہ آج کے دن مسلم لیگ کی حکومت نے ملک کو نیا استحکام بخشا۔ ہم دنیا کے سامنے سر اٹھا کر جینا چاہتے ہیں اور ملکی دفاع پر کوئی سمجھوتا نہیں کریں گے۔ تاہم موجودہ حکومت کے سربراہ کنفیوژڈ ہیں، بھارت مقبوضہ کشمیر میں جارحیت جاری رکھے ہوئے ہے اور مقبوضہ وادی بے گناہ کشمیریوں کے خون سے سرخ ہو رہی ہے۔

ادوسری جانب تقریب سے دیگر مسلم لیگ (ن) کے دیگر رہنمائوں نے بھی خطاب کیا۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا حکمرانوں کے چلن ملک چلانے والے نہیں، ملک میں جمہوریت نہ ہو تو ایٹم بم بھی کام نہیں آتا۔

احسن اقبال نے کہا کہ قومی اداروں کی صلاحیت بدترین سطح پر آگئی ہے، معیشت تباہ ہو جائے تو باقی کیا بچتا ہے۔

سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ملک کی ایٹمی صلاحیت مضبوط معیشت کی ضامن نہیں ہے۔

واضح رہے

اردو زبان کی قابل اعتماد ویب سائٹ ’’واضح رہے‘‘ سنسنی پھیلانے کے بجائے پکّی خبر دینے کے فلسفے پر قائم کی گئی ہے۔ ویب سائٹ پر قومی اور بین الاقوامی حالات حاضرہ عوامی دلچسپی کے پہلو کو مدنظر رکھتے ہوئے پیش کئے جاتے ہیں۔

واضح رہے